Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics

Noha Title Lashay Pay Naujawan Kay
Noha Artist Shahid Baltistani
Click Here To Download Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics

Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics

Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics In Urdu

لاش اکبر کی جو مقتل سے اُٹھا لائے حسینؑ
ایک کہرام تھا خیمے میں جو مولا نے کہا

لاشے پہ نوجواں کے چادر اُڑھاؤ زینب
اکبر کا زخمی سینا ماں سے چُھپاؤ زینب

بینائی بھی نہیں ہے خط کسطرح پڑھوں گا
میں اُس سے کیا کہوں گا
قاصد ہے آنے والا اس کو جگاؤ زینب

بھائی کا غم اٹھانا آساں نہیں ہے بی بی
جی بھر کے رو لے وہ بھی
خیمے میں نوجواں کی بہنیں بلاؤ زینب

کر لو بہن تصور ارمان کچھ تو نکلیں
ہم سہرا پڑھ رہے ہیں
تم اپنے نوجواں کو دولہا بناؤ زینب

کُرتا لہو میں تر ہے مل جائے گا کفن بھی
خواہش بھی ہوگی پوری
اکبر کی شادی والی پوشاک لاؤ زینب

شاید اسی طرح سے دل کو قرار آئے
بینائی لوٹ جائے
آنکھوں سے نوجواں کا کُرتا لگاؤ زینب

مجھ سے زیادہ تم سے نزدیک یہ رہا ہے
تم کو تو سب پتہ ہے
اکبر کے بچپنے کی باتیں سناؤ زینب

لیلٰی کا حال عجب ہے جب سے خبر ہے آئی
دیتا نہیں دکھائی
بازو پکڑ کے ماں کا لاشے پہ لاؤ زینب

لاشہ لیئے تکلم خیمے سے شہہ جو نکلے
رو کر بہن سے بولے
رخصت یہیں سے کردو باہر نہ آؤ زینب


Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics

Lashay Pay Naujawan Kay is one of the best Noha by Shahid Baltistani.

You can listen this Noha online or download in MP3 from this site.

You can also read or download the lyrics of Lashay Pay Naujawan Kay

Read or download lyrics of Lashay Pay Naujawan Kay in roman urdu, urdu and english.

Popular Tags

  • Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics
  • Lyrics of Lashay Pay Naujawan Kay
  • Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics Download
  • Download Lyrics of Lashay Pay Naujawan Kay
  • Lashay Pay Naujawan Kay Lyrics By Shahid Baltistani